Pakistani Readers discussion

18 views
(Urdu Literature) اردو ادب > فکر پالنا

Comments Showing 1-2 of 2 (2 new)    post a comment »
dateDown arrow    newest »

message 1: by Salman (last edited Nov 29, 2017 07:29AM) (new)

Salman Tariq (salmanahmedtariq) | 232 comments جہاں ذوق اور شوق نہ ہو وہاں انسان فکریں پالنے لگتا ہے ۔ ہم باقاعدگی سے گھنٹوں انہی فکروں میں ذہنی طاقت لگانے میں فخر محسوس کرتے ہیں اور جو ٹائم بچ جاتا ہے وہ دوسروں کو انہی پریشانیوں سے آگاہ کرنے میں گزار دیتے ہیں کہ شاید وہ بھی اسی کشتی کا سوار ہو

کچھ لوگ فکر کرنے کے اس سے اعلی مقام پر ہوتے ہیں کہ وہ دوسروں کی ناجائز فکریں گود لینے میں بھی مہارت رکھتیے ہیں مثلا کسی دوسرے کو آپ سے مسلئہ ہے تو آپ آرام سے گھنٹوں ہر اس پہلو پر سوچ سکتے ہیں جس پر نہیں بھی سوچا جاسکتا مگرکبھی اس بات پر غور نہیں کرتے کہ کسی کو آپ سے مسلئہ ہے تو وہ اس کا مسلہ ہے آپ کا نہیں ۔ آپ آرام سے کھا پی سکتے ہیں اپنا پسندید مشغلہ جاری رکھ سکتے ہیں مشغلہ سے بات وہیں پر آگئ ذوق اور شوق۔۔۔۔۔

کالج سے نکلے تو یونیورسٹی میں ناانصافیوں کی فکر، پھر جاب کی اور پھر گھر اور بچے پالنے کی۔۔۔

فرض کریں ہمارے فکر کرنے سے ہمارا مسلے حل جاتے پھر تو وقت ہی وقت ہوتا نا ؟ تو پھر لوگ کیا کرتے؟
کھیلتے شاید، کوئی پینٹنگ کرنے لگتا ، کسی کو کتاب بینی کی لت لگ جاتی ، کچھ سائیں تو ہواؤں سے باتیں کرتے اور بہت سے وہ خواب بننے لگتے جن کو سائینس انوینش یا ڈسکوری کا نام دیتی ہے۔


message 2: by Aakash (new)

Aakash (mistyanon) | 5347 comments Mod
alaaww!!


back to top